شخصیات لائف اسٹائل مذہب نقطۂ نظر

صمونجو بابا:عشق کا راز

عشق دمِ جبرئیل، عشق دلِ مصطفیٰ
عشق خدا کا رُسول، عشق خدا کا کلام
عشق کی مستی سے ہے پیکرِ گِل تابناک
عشق ہے صہبائے خام، عشق ہے کاسُ الکِرام
عشق فقیہِ حرم، عشق امیرِ جُنود
عشق ہے ابن السّبیل، اس کے ہزاروں مقام
عشق کے مِضراب سے نغمۂ تارِ حیات
عشق سے نُورِ حیات، عشق سے نارِ حیات

اقبال کے انھی لافانی الفاظ کی عملی  تفسیر جذبہ عشق ہماری دھرتی کا حسن اور طرہ امتیاز ہے۔  عشق جو ہر دل پر عیاں وہ سربستہ راز ہے جسے پانے کی جستجو میں ازل سے انسان سرگرداں ہے۔ انسان کی نہاد، اس کی بنیاد، اس کی سوچ،  اس کا وجود اور اس کا مقصد حیات ہی عشق ہے۔ انسانی جسم و ذہن  اپنے  اندر ہر پل سلگتی عشق کی آگ کو اور دہکانے میں ہمہ تن و بصد شوق تیار رہتا ہے۔ یہ وہ جامِ پُر سوز و لطافت خیز ہے کہ جسے پینے کو دلِ بےتاب ‘ساقیا اور پلا، اور پلا، اور پلا  کی صدائیں لگاتا رہتا ہے۔

عشق بندے سے ہو یا خدا سے دل و نظر کو وہ پاکیزگی، گیرائی و گہرائی نیز قلب کو وہ سوز و نرمی عطا کرتا ہے کہ عشق کے اسیر  کی جانب جو نظر اٹھے وہ احترام لیے واپس پلٹتی ہے۔ عشق کا جذبہ کسی تن میں پلتا ہو اور وہ تن خالص نہ ہو یہ ممکن ہی نہیں یہی وجہ ہے کہ عشقِ مجازی  کا سفر بھی بالآخر عشقِ حقیقی پر ہی منتج ہوتا ہے۔ دل قطرے میں قلزم کو پالیتا ہے اور پھر جہاں بھر سے بے نیاز اس ذاتِ باری، رب العالمین کے گُن گانے لگتا ہے۔ عشق کا یہ بھی ایک عمدہ وصف ہے کہ فرد اپنے معشوق یعنی خدائے عزوجل کی کل مخلوق  کے لیے رحم و عفو کا پیکر بن جاتا ہے۔ محبوب سے وابستہ تمام ہی لوگوں سے محبت بلاشبہ عشق کا ایک اور عمدہ وصف ہے۔

 دلوں کو عشق کے احساس سے گرمانے اور عشق کے اسرار کی پُر پیچ گتھیاں سلجھانے کو ٹیلیوستان اس سے پہلے بھی اپنے ناظرین کے لیے "یونس ایمرے، محبت کا سفر” کے عنوان سے ایک عمدہ ٹی وی سیریل کا پہلا سیزن اردو زبان میں پیش کرچکا ہے۔ ٹیلیوستان کے فیس بک صفحے کے مطابق، اس بار ایک ولی اللہ کے حالاتِ زندگی پر بنائی گئی ترکی فلم  "صمونجو بابا: عشق کا راز”  کی صورت میں ہمیں عشق کے چند اور اسرار پیش کیے جارہے ہیں۔

شیخ حمیدِ ولی جنھیں ان کی عُرفیت صمونجو بابا کے نام سے بھی پکارا جاتا ہے اسلام کے ایک مشہور ولی، زاہد اور مدرس گزرے ہیں جو ترکی کے شہر بورصہ میں مقیم تھے۔ شیخ اپنے زمانے کی متاثر کن شخصیت اور مسلمان درویش کے طور پر جانے جاتے ہیں۔ 1331ء میں قیصری میں پیدائش جبکہ 1412ء میں دریندے میں وفات پائی۔ سلطان بایزید اول نے بورصہ کی معروف جامع مسجد کی تکمیل کے بعد آپ کو وہاں استاد مقرر کیا۔ صمونجو بابا کے شاگردوں میں مولا فینالی اور حاجی بیرم اول ولی شامل ہیں۔

صمونجو بابا ان متقی لوگوں میں سے ایک ہیں جو روحانی مقابلے کے لیے انادولو (جامعہ) تشریف لے گئے۔  آپ شام، تبریز، اردبیل جیسے مراکزِ علم سے تحصیلِ علم  کے بعد اپنے فرائض کی بجا آوری اور  امہ کی رہنمائی کے لیے بورصہ میں مقیم ہوگئے۔  اپنی زندگی کے روحانی پہلو کو دنیا سے مخفی رکھنے کے لیے آپ روٹیاں بناتے اور انھیں فروخت کرتے، اسی وجہ سے آپ کا نام صمونجو بابا یعنی ’نانبائی بابا‘ پڑ گیا۔  بورصہ میں عظیم جامع مسجد ‘اولو’ کے افتتاح کے موقع پر آپ نے سورہ فاتحہ کا سات مختلف پہلوؤں سے ترجمہ کیا جس سے عوام الناس میں آپ کی مقبولیت بڑھ گئی۔ آپ تشہیر سے بچنا چاہتے تھے اس لیے بورصہ چھوڑ کر آق سرائے تشریف لے گئے۔ بعد ازاں آپ اپنے بیٹے کے ساتھ مکہ تشریف لے گئے۔ مکہ سے واپسی ضرور ہوئی لیکن سفرِ عشق تمام عمر جاری وساری رہا ۔

ٹیلیوستان کی اس پیش کش میں ہم صمونجو بابا کے سفر عشق کو ہی نہیں دیکھ سکیں گے بلکہ ان کے عشق اور علم و دانش کے موتی بھی  اپنے دامن میں بھر سکیں گے۔ ذیل میں ٹیلیوستان کی اس نئی پیش کش سے چند جھلکیاں نوشتہ کے قارئین کی ذوقِ طبع کی نذر ہیں:

 

پاکستان میں پیش کیے جارہے حالیہ بےمقصد اور فضول  ڈراموں، فلموں کے تناظر میں ترکی زبان کے ان شاندار اور بامقصد ڈراموں کو اردو زبان میں  پیش کرکے ٹیلیوستان بلاشبہ   انتہائی گراں قدر خدمات سرانجام دے رہا ہے۔  یہ ڈرامے نہ صرف ہمارے شان دار ماضی کے عکاس ہیں بلکہ ہمیں زندگی کا وہ ڈھنگ بھی عطا کرتے ہیں جن سے ہم اپنی زندگیاں ہموار خطوط پر استوار کرسکتے ہیں۔ اس کے علاوہ ان میں پیش کردہ علم و حکمت کے پیغامات کے تو کیا ہی کہنے۔ ہم ٹیلیوستان کی اس عظیم خدمت کے  حوالے سے ان کے لیے دل سے دعا گو ہیں۔ 

اس کے علاوہ ہم اپنے قارئین اور ٹیلیوستان کے ناظرین سے یہ درخواست بھی کرنا چاہیں گے کہ ان خدمات اور اپنے دین و ثقافت کی ترویج میں ٹیلیوستان کا ساتھ دیجیے۔ آپ ٹیلیوستان اور ان بامقصد ڈراموں/ فلموں کے فروغ  میں اپنی پسندیدگی اور ان پوسٹوں کو زیادہ سے زیادہ شیئر کرکے ٹیلیوستان  کا ساتھ  دے سکتے ہیں اس کے علاوہ آپ زیادہ سے زیادہ ایسے کاموں کو انجام دینے کے ضمن میں مالی طور پر بھی ٹیلیوستان  کا ساتھ دے سکتے ہیں۔  آپ فلمز/ڈراموں کے درمیان اپنی مصنوعات اور کاروبار کی تشہیر کے ذریعے بھی ٹیلیوستان کے ساتھ اشتراک کرسکتے ہیں۔

ٹیلیوستان کے ان ڈراموں کو  اسپانسر کرنے کے لیے ذیل کے ای میل ایڈریس پر رابطہ کیا جا سکتا  ہے:

[email protected]

حمیرا اشرف
لغت نویس، ترجمہ نگار اور بلاگر حمیرا اشرف اپنے ماحول میں مثبت رویوں کی خواہاں ہیں۔ بلا تفریق رنگ، نسل، زبان و جنس صرف محبت پر یقین رکھتی ہیں اور ان کا ماننا ہے کہ دنیا کے تمام مسائل کا حل صرف محبت میں ہی مضمر ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کیجیے