سیر و سیاحت لائف اسٹائل مقامات نقطۂ نظر

میرا حیدرآباد (حصہ اول)

حیدرآباد  کا ذکر جب بھی آتا ہے تو مجھے داستان امیر حمزہ کی مشہور داستان  کے کوہ ندا  کی یاد آتی ہے۔ داستان کے مطابق یہ ایک پہاڑ ہے جس سے متواتر ایک صدا آتی رہتی  ہے اور جو  اس صدا پر اپنے راستے سے پلٹ کر اس پہاڑ کی جانب دیکھتا ہےوہ اس کی طرف ہی […]

طنز و مزاح نقطۂ نظر

یہ جو محبت ہے!

بچپن سے ہی شوق تھا ایک دھانسو قسم کا عشق لڑانے کا۔۔۔ ویسےیہ تو کوئی بات نہ ہوئی کہ عشق اگر ذوق و شوق اور ارادے سے کیا جائے تو عشق لڑانا کہلائے اور اگر بے وقوفوں کی طرح پہلی نظر میں ہی دل کسی کی زلفوں کا اسیرہو گیا تو اسے نرم روپہلے جذبوں […]

نقطۂ نظر

شکستہ اور ٹوٹی پھوٹی سڑکیں

ایک کام کے سلسلے میں راولپنڈی جانا ہوا۔  جس جگہ جانا تھا وہاں کی سڑک نہایت شکستہ اور ٹوٹی پھوٹی تھی اور ہر جگہ گندا پانی تھا۔ اس پر مستزا د آس پاس سے گزرتی اور  چھینٹے اٹھاتی گاڑیوں نے ہر کسی کو نادانستہ  طور پر ناچنے پہ مجبور کر رکھا تھا۔ ایسے اور اس […]

طنز و مزاح نقطۂ نظر

آخر یہ کس کی سازش ہے!

پاکستان میں ہمارے سیاسی اور مذہبی رہنماؤں کا من  پسند فقرہ ہے "یہ سب سازش ہے” "آخر یہ کس کی سازش ہے ؟” "یہ سازشی ٹولے کا کام ہے” ہمارے معاشرے کا رویہ بھی کچھ ایسا ہوگیا ہے کہ ہمیں ہر چیز سے سازش کی بو آنے لگتی ہے۔ ملک کے حالات ابتر ہو گئے […]

نقطۂ نظر

عوام اور اشرافيہ کے مابین بڑھتی ہوئی خلیج

ہماری بدقسمتی ہے کہ آزادی حاصل کیے  سات دہائیاں گزرنے کے باوجود ہم ذات پات اور اونچ نیچ کے خود ساختہ  خول سے باہر نہیں نکل سکے۔  تعلیم، صحت یا کوئی  بھی شعبہ اٹھا کر دیکھ لیں ہر جگہ امیر غریب اور چھوٹےبڑے کے درمیان واضح فصیل دکھائی  دیتی ہے۔  صاحب حیثیت طبقہ علاج اور […]

نقطۂ نظر

ہو جس سے اختلاف اسے مار ڈالیے!

سرپٹ دوڑتے ہوئے اُس نے ایک دفعہ پھر سے مُڑ کر دیکھا جیسے پوچھ رہا ہو میرا قصور کیا ہے؟ اس کی ملتجی نظریں بار بار سوال کر رہی تھیں، ایک دفعہ میرا قصور تو بتا دو؟ اس کا سانس پھولتا جا رہا تھا، ٹانگیں پسینے سے شرابور اور بھاری ہوتی جارہی تھیں قریب تھا […]

نقطۂ نظر

سانحہ ساہیوال،بچوں سے زیادتی اور ہمارا ناقص نظام

زینب اور اس جیسے بے شمار بجوں کے ساتھ زیادتی کے واقعات نیز حالیہ دل دہلا دینے والے سانحۂ ساہیوال نے ہر کسی کو رنج اور دکھ میں مبتلا کر دیا ہے۔  پوری قوم غم و غصے کی کیفیت سے دوچار ہے۔ ان غیر انسانی اور درندگی سے بھرپور واقعات نے ہماری انسانی واخلاقی قدروں […]

سماج نقطۂ نظر

خط، ایک بُھولی کہانی

آج مرزا پر قنوطیت کا دورہ پڑا ہوا تھا۔ آتی جاتی ہر سانس پر ٹھنڈی آہیں بھر رہے تھے۔ غور کیا تو آنکھوں کے کنارے ایک شبنمی قطرہ بھی اٹکا ہوا تھا۔ ہم نے ڈرتے ڈرتے ان کو چھیڑ ہی دیا۔ کہنے لگے بھئی!کل میرا گزر پوسٹ آفس کے سامنے سے ہوا۔ پہلے تو میں […]

سماج نقطۂ نظر

خون ریزی و بربریت

دنیا کے ترقی یافتہ مہذب کہلائے جانے والے ممالک میں بھی انسانی جان و آبرو کی ارزانی کا یہی عالم ہے۔ ظلم و جبر کی یہ کہانیاں روزانہ کی بنیاد پر جاری و ساری ہیں اور راقم کے دل و دماغ پر صرف یہی سوچ حاوی رہتی ہے کہ کیا جنھیں انسان کہا جارہا ہے وہ واقعی انسان ہیں؟

طنز و مزاح نقطۂ نظر

چائے چاہیے!

ہم نے چائے کی بے حرمتی دیکھی ہے۔ چائے میں پاپے کو ڈبو کر نوش کرتے ہوئے دیکھا ہے، جیسے چائے نہ ہو نہاری ہو۔ پھر بعضے تو چائے کو طشتری میں ڈال کر ایسے سڑک سڑک کر پیتے ہیں جیسے شدید نزلے میں ناک سے آوازیں نکل رہی ہوں۔ دل چاہتا ہے ان سے کہیں کہ چائے کا احترام کرو۔ یہ تمام مشروبات کی مرشد ہے۔