سیر و سیاحت متفرقات نقطۂ نظر

میرا حیدرآباد- حصہ دوم

حیدرآباد  میں عید الفطر کی بہار بھی خوب تھی اور عید سے پہلے رمضان۔رمضان کے چاند کا اعلان ہوا اور سحری کی تیاریاں شروع ہوگئیں۔کیا امیر اور کیا غریب، سب رمضان شریف کی تیاریاں حسب توفیق کرتے۔میں نے اپنے گھر میں اماں اور نانی کو دیکھا کہ سحری کے وقت سے کوئی دو تین گھنٹے […]

سماج لائف اسٹائل نقطۂ نظر

امریکن بورن کنفیوزڈ دیسی ABCD

اے بی سی ڈی یعنی امریکن بورن کنفیوزڈ دیسی کی یہ ٹرم سب سے پہلے ایک انڈین ملیالم فلم میں استعمال ہوئی۔ اس میں امریکہ میں پیدا اور پلنے والے دیسی بچوں کے الجھاؤ کو ہائی لائیٹ کیا گیا۔ دیکھتے ہی دیکھتے یہ ٹرم عام ہو گئی۔ خیر فلم میں تو کچھ اور قسم کے […]

سماج لائف اسٹائل نقطۂ نظر

آئی بسنت پالا اڑنت

بسنت منانے پہ پابندی ہے۔ مگر متوالے منائیں گےاور خوب منائیں گے اور منانی بھی چاہیے منانے کو ہے بھی کیا ہمارے پاس۔ جب بھی کوئی تہوار مناؤ۔ مردہ دل ناک بھوں چڑھاتے ہیں کہ یہ تہوار ہندو ہے،  یہ عیسائی ہے، اب ثقافتی تہواروں کا  بھی مذہب ہونے لگا، وہ بھی مسلم، غیر مسلم […]

زبان و ادب نقطۂ نظر

ماں بولی کی اہمیت و افادیت

دنیا کی پانچ ہزار سالہ تسلیم شدہ تاریخ میں ایک بھی قوم ایسی نہیں کہ جس نے کسی دوسرے کی زبان میں تعلیم حاصل کی ہو اور ترقی یافتہ کہلائی ہو۔ آپ بدیشی زبان میں سیکھ تو سکتے ہیں لیکن آپ کسی اور کی زبان میں قوتِ تخلیق سے محروم ہو جاتے ہیں۔  ماہرین ِعلمِ […]

سیر و سیاحت لائف اسٹائل مقامات نقطۂ نظر

میرا حیدرآباد (حصہ اول)

حیدرآباد  کا ذکر جب بھی آتا ہے تو مجھے داستان امیر حمزہ کی مشہور داستان  کے کوہ ندا  کی یاد آتی ہے۔ داستان کے مطابق یہ ایک پہاڑ ہے جس سے متواتر ایک صدا آتی رہتی  ہے اور جو  اس صدا پر اپنے راستے سے پلٹ کر اس پہاڑ کی جانب دیکھتا ہےوہ اس کی طرف ہی […]

طنز و مزاح نقطۂ نظر

یہ جو محبت ہے!

بچپن سے ہی شوق تھا ایک دھانسو قسم کا عشق لڑانے کا۔۔۔ ویسےیہ تو کوئی بات نہ ہوئی کہ عشق اگر ذوق و شوق اور ارادے سے کیا جائے تو عشق لڑانا کہلائے اور اگر بے وقوفوں کی طرح پہلی نظر میں ہی دل کسی کی زلفوں کا اسیرہو گیا تو اسے نرم روپہلے جذبوں […]

نقطۂ نظر

شکستہ اور ٹوٹی پھوٹی سڑکیں

ایک کام کے سلسلے میں راولپنڈی جانا ہوا۔  جس جگہ جانا تھا وہاں کی سڑک نہایت شکستہ اور ٹوٹی پھوٹی تھی اور ہر جگہ گندا پانی تھا۔ اس پر مستزا د آس پاس سے گزرتی اور  چھینٹے اٹھاتی گاڑیوں نے ہر کسی کو نادانستہ  طور پر ناچنے پہ مجبور کر رکھا تھا۔ ایسے اور اس […]