کتب خانہ

محبت کی کتاب – تینتیسویں قسط

محبت اور دسمبر کی گلابی سردیوں کی شام دسمبر کا یہ شاید آخر ی دن ہے محبت زلزلے کے دن سے کومے میں پڑی ہے دسمبر کی گلابی سردیوں کی شام ساحل سے ذرا ہٹ کر ظفر کے فلیٹ کے بیڈروم کی کھڑکی سے اندر جھانکتی ہے نیم روشن، زرد تنہائی کی بُکّل مار کر […]

کتب خانہ

محبت کی کتاب – بتیسویں قسط

محبت منھ  کے بل جاکر گری تھی ظفر کی ہر رگِ جاں میں دھواں ہوتا لہو   آنکھوں کا بادل بن گیا اس کی نظر دھند لاگئی اُسے سنبل کا message پڑھ کے  پاگل پن کا دورہ سا پڑا تھا آرزوئیں صبحیں، شامیں لمس کی کرنیں  نظر کے زاویے پوروں کی شمعیں اور کمرے میں پڑی […]

کتب خانہ

محبت کی کتاب – اکتیسویں قسط

کہی اور ان کہی کے درمیاں کیا تھا سنبل کی آنکھوں میں آنسو نہیں تھے بس اک ریت کا خشک دریاتھا اوراس کے چاروں طرف جنگلوں کی ہوا چیختی پھر رہی تھی اُسے اپنے محبوب کو یہ بتانا تھا وہ مر گئی ہے روایت کے مرگھٹ پہ اس کو دلہن کی طرح سے بٹھایا گیا،سب […]

نقطۂ نظر

ہماری اعلیٰ تعلیم، بالخصوص سائنس اور ٹیکنالوجی  کی تعلیم کا  زوال پذیر معیار  

ہمارے انحطاط کی ایک اہم وجہ ہمارا ناقص اور غیر معیاری نظام تعلیم ہے۔  بچے کے ذہنی رجحان کو مدنظر رکھے بغیر من پسند مضامین اور شعبہ جات کا انتخاب کرکے کمزور بنیادوں پر مضبوط عمارت کھڑی کرنے کی ناکام کوشش کی جاتی ہے۔  جبکہ  کیريئر کاؤنسلنگ کا بھی فقدان ہے۔ ہمارا یہ نظام تعلیم […]

شخصیات نقطۂ نظر

میری فہمیدہ آپا!

"بچے، پیاری بیٹی، چندا، بیٹا، سنو لڑکے، پیارے بیٹے، اچھے لڑکے” یہ سب اندازِ تخاطب اردو کی عظیم شاعرہ، نقاد، ادیبہ، مترجم، فلسفی، مبصر اور ایکٹیوسٹ کے ہیں۔  مجھے نہیں پتا ادبی تعلقات یا دیگر شاعروں ادیبوں کے حلقے میں ان کا طرزِ تخاطب یہی تھا یا نہیں لیکن میرا رشتہ چونکہ فہمیدہ آپا سے […]

نقطۂ نظر

ہمارا نظام تعليم۔ خامياں اور حل

گذشتہ دنوں ایک ٹی وی پروگرام میں بتایا جا رہا تھا کہ دنیا میں سب سے اچھا نظام تعلیم اور تعلیمی ادارے  فن لینڈ اور سویڈن کے ہیں۔  فن لينڈ میں بچے کو سات سال کی عمر میں اسکول میں داخل کیا جاتا ہے۔ شروع کے چند برسوں  میں کوئی نصابی  کتاب نہيں پڑھائی (یا […]

نقطۂ نظر

قومی لباس، نظر انداز کیوں

کچھ عرصہ قبل میں اپنا معمول کا چیک اپ کروانے ایک سرکاری ہسپتال میں گیا۔  ڈاکٹر کے کلینک کے آگے مریضوں کی لمبی قطار تھی۔  میں اپنا قومی لباس زیب تن کیے ہوئے تھا۔  معاشرے کا ایک ذمہ دار شہری ہونے اور قوانين پر سختی سے عمل کرنے والے انسان ہونے کے ناطے میں بھی […]

کتب خانہ

محبت کی کتاب – تیسویں قسط

فون پر بھی ایک گہری چپ کا سایہ تھا کئی دن تک وہ کمرے کے درودیوار میں محبوس بستر کی ہزاروں سلوٹوں کے بیچ اک بے خواب تکیے کی طرح اوندھی پڑی روتی رہی   فون پربھی ایک گہری چپ کا سایہ تھا ظفر کی اَن گنت miss calls اور message تھے جو سنبل کے لمسِ […]

نقطۂ نظر

یہ کیسی جمہوریت ہے

حقیقی جمہوریت میں عوام کی حکومت خالصتاّ عوام کے ووٹوں سے اور عوام کی خدمت کے لیے بنتی ہے۔ سیاسی جماعتیں اپنے ریکارڈ اور عوامی فلاح و بہبود کے حامل منشور کے بل بوتے پر عوام سے ووٹ مانگتی ہیں۔  عوام کو بغیر کسی دباؤ کے اپنا حق رائے دہی  استعمال کرکے نمائندگی کا موقع […]